Poetry Collection by Farheen Abrar | Novels Hub
Authors

Poetry Collection by Farheen Abrar

غزل

بارش

بارش کی بوندیں
مٹی کی سَوندھی خوشبو
رات کی تاریکی
اور میں
ٹھنڈی چلتی ہواٸیں
ہاتھ میں چاۓ کا کپ
کھڑکی کے سامنے کھڑے ہوکر
اس منظر کو دیکھنا
آسمان پر بادلوں کے بیچ گِھرا ہوا چاند
بادلوں کا گرجنا
بجلی کا چمکنا
اس منظر میں ایسے کھوگۓ
منتظر رہی نیند ہم نا سو سکے
اے زود فراموش کچھ تو بھرم رکھا  ہوتا
  بے شمار عداوت سہی پر بصیرت آج بھی یہی ہے
  کہ تغافل کا لبادہ اوڑھے پنہاں رہے مجھ میں رنج
    اب جو پوچھوگے ہم سے جاگنے کا سبب
  فقط اتنا ہی ہے واعظ
  بارش کی بوندیں
 مٹی کی سَوندھی  خوشبو
رات کی تاریکی
اور میں۔۔۔
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close