Poetry Collection by Farheen Abrar | Novels Hub
Authors

Poetry Collection by Farheen Abrar

غزل

ہم جو کہہ نہیں سکتے تمہیں لکھ کر سناٸیں گے
غم جب حد سے سوا ہوجاٸیں زبان بیاں نا کرپاۓ
تمہیں لکھ کر سناٸیں گے
ہے جو آپ بیتی عمرِ رواں میں  سفر کرتی ہوٸی  مسلسل
زباں سے کہہ نا پاٸیں گے
تمہیں لکھ کر  سُناٸیں گے
 لفظوں میں چھپی ہوتی ہے بلا کی تاثیر
  قلم سے ہم صفحات پُر کرتے جاٸیں گے
 زباں سے کہہ نا پاٸیں گے
  تمہیں لکھ کر سناٸیں گے
ہوے جو ہم ہی سے ہم  ہم کلام
دھندلا گۓ الفاظ آنکھیں ہوٸیں اشکبار
   کیفیت جو ہے دل کی زباں سے کہہ نا پاٸیں گے
تمہیں لکھ کر سناٸیں گے
تمہیں لکھ کر سناٸیں گے
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close