Poetry Collection by Farheen Abrar | Novels Hub
Authors

Poetry Collection by Farheen Abrar

غزل

 شام اور میں

نا کوٸی ملال ہو
نا کوٸی سوال ہو
جو ہوا آغاز تو
اختتام لاجواب ہو
فراغت کے لمحات ہوں
دلفریب ٹھنڈی شام ہو
کہ پڑھیے شوق سے اس باب کو
کہ دلچسپ ہر جواز ہو
ہر فکر سے آزدہو
ہر غم سے بےنیاز
دلفریب ٹھنڈی شام ہو
صرف میں اور میری ذات ہو
دور تک پھیلا دلفریب شام کا سکوت ہو
پہاڑوں کے بیچ ڈھلتا ہوا سورج ہو
کبھی نا ٹوٹ کر بکھرنے کا عزم ہو
  نا غم کا کوٸی نشاں باقی ہو
نٸی امید کی کرن اجاگر ہو
  اس شام کے نام ہر غم  سُپرد خاک ہو
کیا ہی خوب  بات ہو
صرف میں اور میری ذات ہو۔۔۔
Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close